خواتین کی تعلیم پر پابندی: این جی اوز نے بڑا قدم اٹھا لیا، حالت سنگین

آس پاس
28 دسمبر 2022 | 09 : 6 - شام

آس پاس(کھوجی ٹی وی) افغانستان میں طالبان حکومت کی جانب سے خواتین کی تعلیم پر پابندی لگا دی گئی ہے جس کے بعد اب کئی این جی اوز نے افغانستان میں سرگرمیاں بھی معطل کر دیں ہیں۔

 

تفصیلات کے مطابق طالبان حکومت نے خواتین کی تعلیم کے ساتھ ساتھ خواتین کی تعلیم کے لئے سرگرم این جی اوز پر بھی پابندی لگائی گئی ہے۔ طالبان حکومت کی اس پابندی کی بعد چار فلاحی تنظیموں نے اپنے آپریشنز بھی معطل کر دیے ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق چار انٹرنیشنل فلاحی تنظیموں کی جانب سے افغانستان میں خواتین کی تعلیم پر پابندی کے بعد اپنی سرگرمیاں بھی معطل کر دیں ہیں۔

 

میڈیا رپورٹس کے مطابق ان تنظیموں میں سیو دی چلڈرن، انٹرنیشنل ریسکیو کمیٹی، نارویجین ریفیوجی کونسل اور کیئر شامل ہیں۔ ان تنظیموں کا کہنا ہے کہ وہ ایک مؤثر انداز میں افغانستان میں اپنی سرگرمیاں بحال نہیں رکھ سکتے کیونکہ افغانستان میں اب بچوں، خواتین اور مردوں تک مؤثر طریقے سے پہنچنا مشکل ہوگیا ہے اس لئے انہوں نے اپنی سرگرمیاں معطل کر دیں ہیں۔

 

ان چار تنظیموں کی جانب سے بچوں اور خواتین کے لئے صحت کی دیکھ بھال، تعلیم، بچوں کے تحفظ اور غذائیت کی خدمات اور گرتے ہوئے انسانی حالات کے دوران مدد فراہم کر رہی تھیں

آرٹیکل کا اختتام

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے